تیراہ :د دہشت گردی سے متاثرہ گھروں کا سروے نہ ہوسکا

0 133

تیراہ: اکاخیل کے چار سال قبل واپسی کے باوجود دہشت گردی سے متاثرہ گھروں کا سروے نہ ہوسکا جبکہ اکسویں صدی کے اس جدید دور میں بھی تعلیم صحت، مواصلات بجلی ، روڈز پینے کے صاف پانی کی سہولیات سے محروم ہیں ،باڑہ کے دور افتادہ علاقہ اکاخیل قبیلے شاڈلے سے لے کر سیڑے کنڈاؤ  جن میں ماترے، میر گٹ خیل،میری خیل، سلطان خیل، ٹنڈے،دروٹہ، منزے، انزل خیل، کنڈولی ،سوخ خوشاب کلہ اور دیگر کے رہائشی جن کی آبادی پچاس ہزار سے زائد نفوس پر مشتمل ہے جنہوں نے دہشت گردی کے دوران نقل مکانی کی تھی اور 2016 کو ان کی واپسی ممکن ہوئی نقل مکانی کے دوران علاقے کی پچانوے فی صد آبادی دہشت گردی کے دوران تباہ ہوئی ، واپسی کے بعد متاثرہ مکان کے مالکان حکومتی امداد کے منتظر رہے تاہم حکومت کی جانب سے اب تک معاوضے کیلئے متاثرہ علاقوں کا سروے نہیں کیا گیا تقریبا پندرہ فیصد لوگوں نے اپنی مدد آپ کے تحت اپنے گھروں کو تعمیر کیا اور رہائش اختیار کی جبکہ کئی خاندان اب بھی امداد میں ملنے والے خیموں میں اپنی زندگی گزار رہے ہیں، جبکہ کئی خاندان اپنے مکانات کی تعمیر کی استطاعت نہ رکھنے پر باڑہ پشاور کے علاقوں اپنے تختہ داروں پر بوجھ بن کر محنت مزدوری کررہے ہیں ،علاقے میں حکومت کی جانب سےپہلے سے تعمیر ہونے والا پرائمری سکول جو کہ دہشت گردی کے دوران تباہ ہو چکا تھا تا حال اس کی تعمیر نہ ہوسکی جبکہ علاقے میں گرلز پرائمری سکول سرے سے موجود ہی نہیں جس کی وجہ سے وہاں مستقبل کے معماروں کا مستقبل تباہ ہو رہا ہے۔ علاقے میں پرائیویٹ تعلیمی ادارے کام کررہے ہیں لیکن غربت کے باعث بچوں کی فیسوں کی عدم ادائیگی پر وہ اپنے بچوں کو پرائیویٹ تعلیمی اداروں میں داخل نہیں کرسکتے ،علاقے اکاخیل میں بڑی تعداد میں قدرتی چشموں کے باوجود پانی کی سہولیات میسر اور پینے کے پانی کی ضروریات کو پورا کرنے  کے لئےخواتین دور دورسے پانی سروں اور گدھوں پر لانے پر مجبور ہیں۔جبکہ جوہڑوں کے پانی سے دیگر کام چلایا جاتا ہے۔ علاقے میں صرف ایک سی آر سی ہسپتال موجود ہونے کے باوجود عملہ نہیں اور صرف ٹیکنیشن کے ذریعے کام چلایا جاتا ہے ،اور مریضوں کو علاج کیلئے سرکاری ادویات موجود نہیں ،سروے کے مطابق علاقے میں بجلی موجود نہیں اور عوام بجلی کی سہولیات سولر کے ذریعے پورا کررہے ہیں ، علاقے کے پسماندگی کی بنیادی وجہ یہاں کی سڑکیں ہیں جو موجود نہیں اور درس جماعت سے براستہ سیڑے کنڈاؤ تیراہ میدان کو ملانے والے روڈ پر کام شروع ہونے کے باوجود اب تک مکمل نہ ہو سکی جو کہ سست روی کا شکار ہے ، جبکہ موجودہ ڈیجیٹل دور میں بھی تیراہ آکا خیل کے عوام موبائل نیٹ ورک اور تھری جی اور فور جی کی سہولیات سے محروم ہیں

Facebook Comments