سپریم کورٹ،امیر مقام کی گرفتاری سے دس دن پہلے آگاہ کرنیکا حکم کالعدم 

0 125
اسلام آباد(یواین پی)سپریم کورٹ نے آمدن سے زائد اچاثۃ جات کیس میں امیر مقام کو گرفتاری سے دس دن پہلے آگاہ کرنے کا پشاور ہائی کورٹ کا حکم معطل قرار دے دیا ہے۔معاملہ کی سماعت جسٹس مشیر عالم کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے کی۔دوران سماعت  جسٹس عمر عطاء بندیال کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے کی۔دوران سماعت نیب پراسیکیوٹر نے عدالت کے روبرو موقف اپنایا کہ پشاور ہائی کورٹ نے سپریم کورٹ کے عبوری حکم کی بنیاد پر فیصلہ دیا کہ گرفتاری سے دس دن پہلے امیر مقام کو آگاہ کیا جائے،جو قانون کیخلاف ہے، دیگر مقدمات میں امیر مقام ضمانت پر ہیں اثاثہ جات کیس میں وارنٹ ہی جاری نہیں ہوئے، امیر مقام کو اثاثہ جات کیس میں گرفتار کرنے کا ارادہ نہیں۔جسٹس قاضی امین نے اس موقع پر ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ نیب پکڑنا نہیں چاہتا تو امیر مقام کیوں گھبرا رہے ہیں؟امیر مقام سے کہیں اچھا سوچا کریں،ایسا نہ ہو باہر جا کر نیب والے امیر مقام کو گرفتار کر لیں۔ امیر مقام کے وکیل نے اس موق پر موقف اپنایا کہ سیاسی دباؤ بڑھتا ہے تو گرفتاری کا خدشہ ہوتا ہے۔ عدالت عظمیٰ نے  وارنٹ گرفتاری جاری نہ ہونے کی نیب یقین دہانی پر امیر مقام کو کرفتاری سے دس دن قبل آگاہ کرنے کا پشاور ہائی کورٹ کا حکم معطل قرار دیتے ہوئے معاملے کی سماعت غیر معینہ مدت تک کے لئے ملتوی کر دی ہے۔
Facebook Comments