پی ٹی آئی حکومت نے ایک مایوس کن بجٹ پیش کیا، بلاول بھٹو زرداری

0 113

کراچی:  بلاول بھٹو زرداری نے حکومتی بجٹ پر ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان پیپلز پارٹی اس کو مکمل طور پر مسترد کرتی ہے۔ پی ٹی آئی حکومت نے ایک مایوس کن بجٹ پیش کیا۔

بلاول بھٹو زرداری کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ پاکستان ان دنوں تاریخی چیلنجز کا سامنا کر رہا ہے۔ کورونا وائرس کی وبا کی وجہ سے آج ہر پاکستانی کی جان خطرے میں ہے۔ اس کے علاوہ پچس برس بعد ملک میں ٹِڈی دَل کا سب سے بڑا حملہ ہماری زراعت، فوڈ سیکیورٹی اور معیشت کے لئے بڑا خطرہ ہے۔

چیئرمین پیپلز پارٹی نے کہا کہ پی ٹی آئی کے بجٹ میں ملک کو درپیش خطرات کو کوئی اہمیت نہیں دی گئی بلکہ ایک روایتی بجٹ پیش کیا۔ یہ ‘’پی ٹی آئی ایم ایف’’ کا ایک عوام دشمن بجٹ ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ بجٹ میں عام آدمی کو کوئی ریلیف نہیں ملا، اگر ریلیف ملا ہے تو امیر طبقے کو ملا ہے۔ بجٹ میں عام آدمی کو صرف اور صرف تکلیف دی گئی۔ اس بجٹ میں تنخواہوں اور پنشنز میں کوئی اضافہ نہیں کیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ ہم نہیں چاہتے کہ کورونا وائرس کی وجہ سے ہمارے بزرگ اپنے گھروں سے باہر نکلیں۔ اس وقت ہمیں اپنے بزرگوں کو پنشن میں اضافہ کرکے ریلیف پہنچانا چاہیے تھا۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ وفاقی بجٹ میں اگلی صفوں پر لڑنے والے طبی عملے کے لئے خصوصی اعلانات کرنے چاہیے تھے۔ افسوس کے ساتھ کہنا پڑ رہا ہے کہ بجٹ میں کوئی ریلیف نظر نہیں آیا۔ ہم امید کر رہے تھے کہ کورونا وائرس سے مقابلے کیلئے بجٹ میں ہر صوبے کے لئے خصوصی ہیلتھ پیکج دیا جائے گا، مگر ایسا نہ ہوا۔

انہوں نے کہا کہ ہر پاکستانی کو پی ٹی آئی کے بجٹ کو رد کرنا چاہیے۔ پاکستان پیپلز پارٹی سمیت ملک کی دیگر اپوزیشن جماعتیں اس بجٹ پر جلد ایک اے پی سی کا انعقاد کریں گی۔

Facebook Comments