حکومت نے شہبازشریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کے بعد بڑے اقدام کا فیصلہ

0 161

اسلام آباد (این این آئی)وفاقی کابینہ نے نئی سول ایو ی ایشن پالیسی ،تمام بین الاقوامی ائیر لائنز کے ساتھ معاہدوں کے جائزے ، 10 رکنی گروبندھک کمیٹی تشکیل دینے کی منظوری اور سی ڈی اے اور ایل ڈی اے کو شہر نہ پھیلانے کی ہدایت کی ہے جبکہ وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات چوہدری فواد حسین نے شہبازشریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کے لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے کہاہے کہ احتساب کا عمل جاری رہے گا ،اس میں نرمی کا نہیں سوچ سکتے،بلاول نے 300 ٹکٹ خریدے ، خوشی کی بات ہے انہیں اتنے لوگ بھی مل گئے، بلاول نے پہلی بار پیسے دے کر 11 لاکھ روپے ٹکٹ کے ادا کیے، مراد علی شاہ این ایف سی میں سندھ کا حصہ بڑھانے کا مطالبہ کررہے ہیں، پیسہ سندھ کے نام پر لیا جاتا ہے ،دبئی میں فلیٹ کھلتے ہیں، کرتار پور راہداری نومبر میں کھلے گی، سول ایوی ایشن خواتین پائلٹ کی فیس میں 4 لاکھ تک ادا کرے گی، شہری ہوا بازی نے اندرون ملک فضائی کرایوں میں کمی کی سفارش کی، پائلٹ کے لائسنس کی مدت بڑھاکر 5برس کردی گئی ہے۔ منگل کو وزیراعظم عمران خان کی صدارت میں وفاقی کابینہ کے اجلاس میں متعدد فیصلے کئے گئے جس کے مطابق نئی سول ایوی ایشن پالیسی کی منظوری،تمام بین الاقوامی ائیر لائنز کے ساتھ معاہدوں کے جائزے ،غیرملکی سیاحوں کو این او سی کی ضرورت نہیں ہوگی کا فیصلہ کیا گیا ۔ کابینہ نے فیصلہ کیا کہ کرتار پور راہداری نومبر میں کھلے گی، 10 رکنی گروبندھک کمیٹی تشکیل دینے ، وزیراعظم نے سی ڈی اے اور ایل ڈی اے کو شہر نہ پھیلانے کی ہدایت کی ۔وزیر اطلاعات چوہدری فواد حسین نے کابینہ اجلاس کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے کہاکہ 10رکنی گروبندک کمیٹی تشکیل دیدی گئی ہے۔ انہوں نے کہاکہ کرتار پور راہداری نومبر میں کھلے گی۔انہوں نے کہاکہ نئی سول ایوی ایشن پالیسی کی منظوری دیدی گئی ہے۔انہوں نے کہاکہ نئی سول ایشین پالیسی کا مقصد ہوابازی سے متعلق صنعتوں کی بحالی ہے۔وزیر اطلاعات نے کہاکہ وزیراعظم نے سی ڈی اے اور ایل ڈی اے کو شہر نہ پھیلانے کی ہدایت کی ہے۔انہوں نے کہاکہ بلیوایریا سمیت تمام تجارتی مراکز میں بلند عمارتوں کیلئے این او سی کی ضرورت نہیں ہے۔ انہوں نے کہاکہ وزیراعظم سیاحت کے فروغ پر خصوصی توجہ دے رہے ہیں،برطانیہ،ترکی ،یواے ای،سعودی عرب کو ای ویزہ کی سہولت دی جارہی ہے۔انہوں نے کہاکہ 170ممالک کو ای ویزا کی سہولیات فراہم کی جائیں گے۔چوہدری فواد حسین نے کہاکہ کسی غیر ملکی کو پاکستان میںکہیں جانے کیلئے این او سی کی شرط ختم کردی ہے۔وزیر اطلاعات نے کہاکہ سیاحتی مقامات تک فضائی سروس پر ٹیکس زیرو کردیا گیا ہے۔انہوں نے کہاکہ پاکستان میں اوپن سکائی پالیسی ختم کی جارہی ہے، بین الاقوامی کمپنیوں کیساتھ معاہدوں پر نظر ثانی کی منظوری دی گئی ہے۔انہوں نے کہاکہ خواتین پائلٹ کی خصوصی حوصلہ افزائی کی جائیگی،سول ایوی ایشن خواتین پائلٹ کی فیس میں 4لاکھ تک ادا کریگی۔وزیر اطلاعات نے کہاکہ شہری ہوا بازی نے اندرون ملک فضائی کرایوں میںکمی کی سفارش کی۔وزیر اطلاعات نے کہاکہ پائلٹ کے لائسنس کی مدت بڑھاکر 5برس کردی گئی ہے۔چوہدری فواد حسین نے کہا کہ سیاحتی علاقوں تک رسائی آسان بنانے کیلئے ہیلی کاپٹر سروس شروع کرنے پر غور ہوا ۔انہوں نے کہاکہ نوازشریف سے متعلق عدالتی فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہیں سپریم کورٹ کے فیصلے پر عملدرآمد کریں گے۔انہوں نے کہاکہ نوازشریف کا کہنا ہے کہ انہیں کوئی بیماری نہیں بلکہ دماغی دباؤ ہے،نوازشریف باہر جانا چاہتے ہیں تو عوام کے پیسے واپس کردیں۔چوہدری فواد حسین نے کہاکہ دیکھیں گے کہ نوازشریف کا نام ای سی ایل پر ڈالنے کی ضرورت ہے۔اس موقع پر صحافیوں نے یادلایا کہ نوازشریف کا نام پہلے ہی ای سی ایل پر موجود ہے ۔ انہوں نے کہاکہ شہبازشریف کا نام ای سی ایل سے ہٹانے کا فیصلہ چیلنج کریں گے۔وزیر اطلاعات نے کہاکہ حیران ہوں شریف برادران کو اپنے بنائے گئے اتفاق ہسپتال پر بھی بھروسہ نہیں۔انہوں نے کہاکہ بلاول بھٹو نے ٹرین مارچ کیلئے 300ٹکٹیں خریدیں،پہلی مرتبہ پیپلزپارٹی کو ٹرین کی ٹکٹیں خریدنی پڑی ہیں۔انہوں نے کہاکہ سندھ کا پیسہ بیرون ملک منتقل کرنے میں وزیراعلیٰ سندھ کا کلیدی کردار ہے۔انہوں نے کہاکہ سندھ حکومت کے اعلیٰ عہدیداروں کو نیب کیساتھ تعاون کرنا چاہیے۔ایک سوال پر انہوں نے کہاکہ احتساب کا عمل جاری رہے گا اس میں نرمی کا نہیں سوچ سکتے۔وفاقی وزیر اطلاعات نے کہا کہ پی اے سی کا مذاق شہبازشریف سے شروع ہوا، ہمیں بعد میں سمجھ آیا کہ پیپلزپارٹی اتنی شدو مد سے شہبازشریف کیلئے کیوں فرمائش کررہی ہے، انہوں نے فریال تالپور اور شرجیل میمن کو پی اے سی میں ڈالنا تھا جس کے لیے انہوں نے شہباز شریف کا کندھا استعمال کیا۔

Facebook Comments