فیسوں کیخلاف منفی پروپگنڈا پھیلانے والے تعلیمی زوال کی سازشوں کا آلہ کار ہیں،سلیم خان

0 127
پشاور (پیام خیبر نیوز)پرائیویٹ ایجوکیشن نیٹ ورک (PEN) کے صوبائی صدر محمد سلیم خان نے کہا ہے کہ خیبر پختونخوا کے نجی سکولوں میں دو لاکھ سے زائد ٹیچنگ اور نان ٹیچنگ سٹاف کے روزگار کا انحصار بچوں کی ماہانہ فیس وصولی پر ہے فیسوں کی عدم ادائیگی لاکھوں گھرانوں کے چولہے ٹھنڈے کرنے کا باعث بن سکتی ہے فیسوں کے خلاف شور شرابہ اور منفی پروپگنڈا پھیلانے والے تعلیمی زوال اور بے روزگاری کی سازشوں کا آلہ کار ہیں ہماری چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ سے اپیل ہے کہ سوشل میڈیا پر سستی شہرت کے شوق میں منفی پرپگنڈے پھیلانے والوں کا محاسبہ کیا جائے ایسے عناصر کی خود نمائی کا شوق تعلیمی اداروں اور غریبوں کے روزگار کو لے ڈوبے گا  نجی تعلیمی اداروں کو موجودہ کورونا وائرس سے پیدا ونے والے معاشی بحران کا بخوبی احساس ہے اور وہ پہلے ہی متاثرہ اور مستحق خاندانوں کو ریلیف دیلے کا اعلان کر چکے ہیں ان خیالات کا اظہار انہوں نے میڈیا سے موجودہ حالت پر اپنی خصوصی بات چیت کے دوران کیا انہوں نے مزید کہا کہ سکولوں کو فیسیں نہیں ملیں گی تو اس شعبہ سے منسلک لاکھوں افراد کی تنخواہیں کہاں سے آئیں گی ولدین فیسوں کی ادائیگی یقینی بنائیں تاکہ موجودہ حالات میں سفید پوش طبقہ اپنے اس کٹھن وقت کو سہارا دے سکے صوبائی حکومت نجی سکولوں کے مسائل اور ان سے منسلک لاکھوں افراد کے روزگار کے معاملہ کو سنجیدگی سے لیے ہوئے فوری طور پر ان خدشات کے خلاف حکمت عملی اپنائے، بعض لوگ تعلیم دوست اور صاحب حیثیت طبقہ میں گمراہ کن پروپگنڈا پھلا کر پہلے سے پیدا شدہ بحران کو مزید تیز تر کر کے اپنی منفی سوچوں کو تقویت دے رہے ہیں جس کے اثرات کسی صورت بھی معاشرے کے مفاد میں نہیں ہوسکتے۔
Facebook Comments