وزیراعظم عمران خان نے پاکستانیوں کی فکر بڑھا دینے والی وارننگ جاری کر دی

0 107

اسلام آباد(ویب ڈیسک) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ لاک ڈاؤن کے باعث حکومت مستحقین کی مدد کے لیے پوری کوشش کررہی ہے، دنیا میں ایسی صورت حال پہلے کبھی نہیں آئی جیسی آج ہے۔ تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے احساس ٹیلی تھون میں شرکت کی۔ اس موقع پر انہوں نے کہاکہ لوگوں کو خوش فہمی ہوجاتی ہے کہ دیگر ممالک جیسے حالات یہاں نہیں ہیں، کرونا کے باعث لاک ڈاؤن کے اثرات ابھی آئیں گے، لوگوں کی سیونگز ختم ہورہی ہیں، گھروں میں بند ہیں، حکومت مدد کی ہرممکن کوشش کررہی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ احساس ایمرجنسی پروگرام کے ذریعے بلاتفریق رقم تقسیم ہورہی ہے، کوئی حکومت کرونا کی صورت حال کا اکیلا مقابلہ نہیں کرسکتی، پوری قوم نے مل کر کرونا وائرس کا مقابلہ کرنا ہوگا، عوام جتنی زیادہ احتیاط کریں وہ کم ہے، کبھی ایسا وائرس دنیا میں نہیں آیا جو بہت تیزی سے پھیلتا ہے۔ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق اگر مکمل لاک ڈاون بھی کیا تو کورونا وائرس کا پھیلاو نہیں رکے گا، کیونکہ اگر کورونا وائرس نے رکنا ہوتا تو اب تک رک چکا ہوتا۔ وزیراعظم عمران خان خان نے کہا ہے کہ پتا نہیں کورونا دوچار یا چھ ماہ کب تک رہتا ہے، ہم یہ نہیں کہہ سکتے کہ لاک ڈاؤن کرنے سے کورونا ختم ہوجائے گا، ہمیں سمجھنا ہوگا کہ اب ہمیں کورونا کے ساتھ رہنا پڑے گا اور اگر مکمل لاک ڈاون بھی کیا تو کورونا وائرس کا پھیلاو نہیں رکے گا، کیونکہ اگر کورونا وائرس نے رکنا ہوتا تو اب تک رک چکا ہوتا۔ امریکی صدرٹرمپ سے کل رات بات ہوئی ، وہاں بھی معیشت متاثر ہے، 40 ہزار لوگ مرگئے ہیں، ہم ملک بند کرکے کبھی بھی پورے ملک کی مدد نہیں کرسکتے۔ کل ٹرمپ نے بھی وینٹی لیٹرز بھیجنے کی آفر کی ہے، ان کے وینٹی لیٹرز اب کافی بننا شروع ہوگئے ہیں ۔امریکہ نے 2 ہزار ارب ڈالر مختص کیا ، ٹرمپ نے مجھے کہا کہ وہ 2 ہزار ارب ڈالر زوہ مزید خرچ کرنے لگے ہیں۔

Facebook Comments