پشاور‘ والدین کا وبائی صورتحال میں سکولز نہ کھولنے کا مطالبہ

0 112

پشاور(سٹی رپورٹر) پشاور سے تعلق رکھنے والے طلبہ کے والدین نے وبائی صورتحال میں سکولوں کو نہ کھولنے کا مطالبہ کیا ہے اور کہا ہے کہ وبائی صورتحال میں سکولز کھولنے سے یہ وباء مزید پھیل جائیگا جس سے بچوں کے والدین اور گھر کے دیگر افراد کو بھی یہ وباء لاحق ہو سکتا ہے۔ طلبہ کے والدین محمد اکرام‘ بنارس خان‘ عظمیٰ بی بی‘ زہرہ اسلم‘ عبد الرشید اور دیگر نے اپنے ایک مشترکہ بیان میں کہا ہے کہ پرائیویٹ سکولز مالکان کی جانب سے سکولوں کو کھولنے کا مطالبہ صرف اور صرف فیسوں کے حصول کیلئے کیا جا رہا ہے حالانکہ ہر سال جون‘ جولائی اور اگست کے مہینوں میں موسم گرما کی چھٹیاں ہوتی ہیں جبکہ اس وبائی صورتحال میں سکولز مالکان کو بچوں کی پڑھائی اور سال کے ضیاع کا غم کیوں ستا رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ سکولز مالکان کمسن بچوں کی زندگیوں کے ساتھ نہ کھیلے کیونکہ ان کی قوت مدافعت انتہائی کمزور ہوتی ہے جبکہ اس کیلئے کورونا وائرس مزید خطرناک ہوسکتا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اگر حکومت کی جانب سے اس وبائی صورتحال میں سکولز کھولے گئے تو اس کے خلاف قانونی چارہ جوئی کریں گے کیونکہ سکولز مالکان کو بچوں کی صحت کے حوالے سے نہیں بلکہ اپنی فیسوں سے متعلق فکر ہے۔ انہوں نے دھمکی دی کہ تعلیمی اداروں کو کھولنے کی صورت میں والدین کی جانب سے بھر پور احتجاج کیا جائیگا اور کسی بھی جانی نقصان کی صورت میں تمام تر ذمہ داری حکومت اور متعلقہ مافیا پر عائد ہوگی۔

Facebook Comments