لاک ڈاؤن نرم ہوتے ہی بازاروں میں رش

0 164

لاہور (ویب ڈیسک) لاک ڈاﺅن نرم ہوتے ہی بازاروں میں رش لگ گیا ، شہریوں نے کورونا سے بچنے کیلئے طے شدہ احتیاطی تدابیر کی دھجیاں اڑادیں ، دکاندار بھی ایس اوپیز پر عمل کرانے میں ناکام ہوگئے ۔ذرائع کے مطابق لاک ڈاﺅن میں نرمی اور عید قریب آتے ہی شہری کورونا کو بھول گئے ،کراچی، لاہور، ، کوئٹہ اور پشاور سمیت بڑے اورچھوٹے بازاروں میں خریداروں کا ہجوم نظر آنے لگا ، سڑکوں پر بھی گاڑیوں کاسیلاب امڈ آیا۔ دکاندار ہو یا خریدار ،سب نے احتیاطی تدابیر کی دھجیاں اڑا دیں ۔ اکثر مقامات اور بڑی بڑی دکانوں پر خریداری کے لیے عوام کی قطاریں نظر آئیں ۔ مارکیٹوں میں رش کی وجہ سے چاند رات کاسماں پیدا ہوگیا، خواتین اور بچوں کی بڑی تعداد ماسک کے بغیر بازاروں میں گھومتی نظر آئی ۔ دکانداروں اور شہریوں کی جانب سے سماجی فاصلے کا خیال نہیں رکھا گیا بلکہ حکومت کے طے کردہ ضابطہ کار کی بھی پابندی نہیں کی گئی۔ماسک پہننے والوں کی تعداد بھی انتہائی کم ہوگئی ، کسی دکان پر سرکاری حکم کے مطابق سینٹائزر رکھے گئے نہ ہی طے شدہ ایس او پیز پر عمل درآمدنظرآیا۔دکانداروں کا کہنا ہے کہ وہ کسٹمرز سے خفاظتی اقدامات پر عمل درامد کرنے کی اپیل کر رہے ہیں تاہم مخصوص اوقات میں مارکیٹیں کھلنے سے شہریوں کا رش زیادہ ہے ۔ بڑے شہروں میں احتیاطی تدابیر کی خلاف ورزی کے باوجود قانون نافذ کرنے والے اداروں کی جانب سے کوئی کارروائی نہیں کی گئی۔ لاک ڈاﺅن نرم ہوتے ہی بازاروں میں رش لگ گیا ، شہریوں نے کورونا سے بچنے کیلئے طے شدہ احتیاطی تدابیر کی دھجیاں اڑادیں ، دکاندار بھی ایس اوپیز پر عمل کرانے میں ناکام ہوگئے۔

Facebook Comments