فروری میں مہنگائی کی شرح 1.04فیصد کم رہی، ادارہ شماریات

0 123

اسلام آباد(آئی این پی) حکومتی اقدامات کے باعث فروری میں مہنگائی کی شرح جنوری کے مقابلے ایک اعشاریہ صفرچارفیصد کم ہوئی ہے۔ وفاقی ادارہ شماریات کی طرف سے جاری اعداد و شمارکے مطابق رواں سال جنوری کی چودہ اعشاریہ چھ فیصد شرح مہنگائی کم ہو کر بارہ اعشاریہ چارفیصد پرریکارڈ کی گئی ہے۔فروری کے دوران سبزیوں کی قیمتوں میں تیرہ فیصد، خوردنی تیل دس فیصد، چینی آٹھ، پھل چار اور دالیں دو فیصد تک مہنگی ہوئیں جبکہ گذشتہ ماہ ٹماٹر ساٹھ فیصد، انڈے چھبیس، ایل پی جی اور بجلی تیرہ، سبزیاں گیارہ اور آٹا پانچ فیصد سستا ہوا اس سال جنوری میں غذائی اشیا کی قیمتوں میں اچانک اضافہ سے شرح مہنگائی دوفیصد بڑھی۔وفاقی ادارہ شماریات کے مطابق حکومت نے مہنگائی کو کنٹرول کرنے کے لئے ہنگامی اقدامات کیے، جن کے تحت یوٹیلیٹی اسٹورزپردو ارب روپیماہانہ کی سبسڈی فراہم کرنے کی منظوری دی گئی جبکہ بجلی اورگیس ٹیرف میں اضافہ کوموخرکیا گیا۔وفاقی بیورو شماریات کے اعداد و شمار کے مطابق ایک سال میں پیاز ایک سو دو فیصد، دال مونگ چوراسی فیصد، آلو تراسی فیصد اور سبزیاں باسٹھ فیصد مہنگی ہوئیں۔گذشتہ ایک سال میں گیس چارجزپچپن فیصد، دال ماش اکیاون فیصد، مکھن تیتالیس فیصد، چینی سینتیس فیصد، گھی چونتیس فیصد، موٹر فیول ستائیس فیصد، دال چنا چوبیس فیصد اور دال مسور بائیس فیصد مہنگی ہوئی۔اس کے علاوہ ایک سال میں ٹماٹر اکسٹھ فیصد، انڈے دس فیصد اور بجلی کے نرخ چار فیصد سستے ہوئے۔

Facebook Comments