پاکستان میں خواتین کو اسلامی،آئینی،سماجی تحفظ حاصل ہے،لیاقت بلوچ

0 144
لاہور (یواین پی) نائب امیر جماعت اسلامی اور سابق پارلیمانی لیڈر لیاقت بلوچ نے جامعہ پنجاب کی طالبات کے وفد اور پی ایم ڈی کی تحقیقی مقالہ کی طالبہ سے گفتگو میں کہا ہے کہ پاکستان میں خواتین کو اسلامی،آئینی،سماجی تحفظ حاصل ہے۔ریاستی نظام کی تباہی،قانون کی بالادستی نہ ہونے اور معاشرتی،سماجی،معاشی ناہمواری کی وجہ سے صرف خواتین نہیں تمام طبقات،ظلم و جبر،لاقانونیت کا شکار ہیں۔وہی حکمران اور بالادست طبقہ جس نے 22کروڑ عوام کو دکھ،محرومیاں اور پستی دی ہے وہ عورت کے پیچھے چھپ کر تمام معاشرتی اقدار کو تباہ کرکے عالمی سامراج کی خواہش و ایجنڈا کے مطابق پاکستان کو لبرل، بے ہودگی،مادرپدرآزادی اور عورت کی انتہائی تذلیل کرناچاہتے ہیں۔لیاقت بلوچ نے کہا کہ رسول ﷺ محسن نسواں ہیں۔مرد و خواتین کی برابری سب سے پہلے آپﷺ نے معاشرے میں متعارف کروائی۔اسلام کا پاکستان کے آئین اوراقوام متحدہ کے چارٹر کے مطابق خواتین کے حقوق کو یقینی بنایا جائے۔تعلیم،صحت،روزگار،معاشرتی وقار،ملازمت کی جگہ پر تحفظ فراہم کرنا ریاست کی ذمہ داری ہے۔ مرد اور عوت معاشرہ خاندان کا اہم ترین حصہ ہیں۔فرسٹریشن اور لبرل ازم کی شکار خواتین کو عالمی قوتیں اور این جی اوز اپنے مقاصد کے لیے استعمال کررہی ہیں۔حکومت اور سیاسی دینی جمہوری قوتیں ریاستی معاشرتی ایجنڈا،دین اور ملک دشمن اداروں کے سامنے سرنڈر نہ کریں۔حکومت مہنگائی،بے روزگاری ختم کرے اور تمام طبقات کے بنیادی انسانی حقوق کو یقینی بنائے۔
Facebook Comments