باچاخان انٹرنیشنل ائیرپورٹ میں کارپارکنگ کی تعمیر کیلئے اقدامات اٹھارہے ہیں،غلام سرور

0 55

پشاور (اے پی پی)وفاقی وزیرہوابازی غلام سرورخان نے کہاہے کہ باچاخان انٹرنیشنل ایئرپورٹ میں کارپارکنگ اور سڑکوں کی تعمیرکیلئے اقدامات اٹھارہے ہیں تاہم طویل المدتی پالیسی کے تحت ایئرپورٹ کو منتقل کرنے کیلئے بھی اقدامات جاری ہیں، ایئرپورٹ کیلئے اضافی اراضی کے حصول کیلئے ایئرفورس کیساتھ بات چیت جاری ہے۔ان خیالات کااظہار انہوں نے باچاخان انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر میڈیاکوپریس بریفنگ دیتے ہوئے دوران کیااس موقع پرخیبرپختونخواحکومت کے ترجمان اجمل وزیربھی موجودتھے۔وفاقی وزیرغلام سرورنے کہاکہ انہوں نے اپوزیشن کی جانب سے پارلیمنٹ میں باچاخان ائیرپورٹ میں کارپارکنگ اور روڈکی سہولیات سے متعلق تنقیدکے نتیجے میں باچاخان ایئرپورٹ کاخصوصی دورہ کیاانہوں نے کہاکہ ایئرٹریفک کے حوالے سے مذکورہ ایئرپورٹ پر پروازوں کا رش بڑھاہے نئے ایئرپورٹ کی ضرورت ہے تاہم عارضی طور پر یہاں پر کارپارکنگ،روڈزاور دیگرمسائل کوحل کرنے کیلئے اقدامات کئے جارہے ہیں پشاورکاموجودہ ایئرپورٹ شہرکے وسط میں واقع ہے یہ ماضی میں ایئرفورس کا ایئرپورٹ تھایہاں پر سہولیات کی فراہمی کیلئے عارضی بنیادوں پر انتظامات کررہے ہیں ایئرپورٹ میں توسیعی منصوبے کیلئے ایئرفورس کیساتھ اراضی کے حصول کیلئے بات چیت ہورہی ہے اس حوالے سے ایئرچیف سے رابطہ کیاجائے گا انہوں نے کہاکہ آج اسلام آباد میں ترکی کے صدر کی آمدکی وجہ سے کافی مصروف دن گزاراہے کیونکہ انہوں نے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کیا اور معیشت اورامن کے حوالے سے پاکستان کو مکمل طور پر تعاون کی یقین دہانی کرائی مختلف سیکٹرمیں ترکی کیساتھ معاہدوں پر دستخط ہورہے ہیں جس میں نئے آرسی ڈی طرزکی تنظیم کی بنیاد رکھی جارہی ہے جس سے پاکستان کے کردار اوراہمیت میں مزیداضافہ ہوگا۔غلام سرورنے کہاکہ ایران اور سعودی عرب کیساتھ پاکستان کے برادرانہ تعلقات ہیں تاہم ایران اورسعودی عرب کے اختلافات میں پاکستان نے غیرجانبدار اور ڈائیلاگ کی طرف جانے پرزوردیاہے۔انہوں نے کہاکہ پچھلی حکومتوں کی نااہلیوں کی بدولت پی آئی اے موجودہ حکومت کو خسارے میں ملا تاہم ہمارے اقدامات کی وجہ سے اس کا ریونیوبڑھناشروع ہوگیاہے اورخسارہ کم ہوگیاہے مزیدبہتری کی گنجائش ہے تاہم پی آئی اے کو منافع بخش ادارہ بنانے کیلئے جدوجہدجاری ہے۔انہوں نے کہاکہ کروناوائرس کی وجہ سے ملک کے تمام ایئرپورٹس پر فول پروف انتظامات کی بدولت ابتک کوئی کیس سامنے نہیں آیا انہوں نے کہاکہ پی آئی اے کافلائٹ31جہازوں پرمشتمل ہے جس میں ایک نیاجہاز بھی شامل کیاگیاہے جب کہ پانچ مزید جہازوں کوبھی شامل کرنے کیلئے مستقبل میں اقدامات اٹھائے جائینگے۔

Facebook Comments