وزیر اعلیٰ کے دورہ خان پور سے پسماندہ علاقے کی محرومیاں دور ہوں گی،ارشد ایوب خان

0 143

پشاور (اے پی پی) ضلعی ترقیاتی مشاورتی کمیٹی ہری پور کے سربراہ اور رکن خیبر پختونخوا اسمبلی ارشد ایوب خان نے کہا ہے کہ خان پور کے پسماندہ علاقے میں 30سال کے بعد کوئی وزیراعلیٰ آیا ہے اور ہم وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان کے مشکور ہیں کہ وہ ہماری ایک درخواست پر خان پور آئے ہیں اور ان کے اس دورے سے خان پور کی محرومیاں دور ہوں گی۔ وہ ہفتہ کے روز خان پور میں ضلعی انتظامیہ کے زیر اہتمام تین روزہ خان پور میلے کی افتتاحی تقریب اور بعدازاں ترنادہ کے مقام پر بہت بڑے جلسہ عام سے خطاب کر رہے تھے۔ افتتاحی تقریب اور جلسہ عام کے مہمان خصوصی وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان تھے۔ جنہوں نے خان پور فیسٹول کے علاوہ تحصیل کمپلیکس خان پور، ریسکو1122، تحصیل کونسل ٹی ایم اے کی عمارات کی تعمیر اور ترنا دہ کوہالہ بالا روڈ و گورنمنٹ گرلز ڈگری کالج خان پور کا افتتاح بھی کیا۔ترنادہ تا کوہالہ بالا 35 کلومیٹر روڈ دو ارب 23 کروڑ 21 لاکھ روپے،گرلز ڈگری کالج آٹھ کروڑ 37 لاکھ روپے،تحصیل کمپلیکس 13کروڑ 90لاکھ روپے، ریسکو1122 کی عمارت تین کروڑ 96 لاکھ روپے اور تحصیل کونسل ٹی ایم اے کی عمارت چار کروڑ43 لاکھ روپے کی لاگت سے تعمیر کی جائے گی۔تقریبات سے وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان،وفاقی وزیر پانی و بجلی عمر ایوب خان، پی ٹی آئی کے رہنما یوسف ایوب خان اور دیگر مقررین نے بھی خطاب کیا جبکہ صوبائی وزیر تعلیم اکبر ایوب خان، مشیر اعلیٰ تعلیم خلیق الزمان، ایم پی اے فیصل زمان، ڈپٹی کمشنر ہری پور کیپٹن (ر) ندیم ناصر، ہزارہ وضلعی پولیس کے اعلی حکام،ضلعی انتظامیہ کے افسران، پی ٹی آئی کے رہنما اور کارکنان بھی اس موقع پر موجود تھے۔ چیئرمین ڈیڈیک و ایم پی اے ارشد ایوب خان نے اپنے خطاب میں وزیراعلیٰ سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ خان پور میں بے پناہ سیاحتی کشش،خوبصورتی، ڈیم، آثار قدیمہ اورزراعت موجود ہے جن میں ملکی اور غیر ملکی سیاح بے حد دلچسپی رکھتے ہیں لیکن یہاں سڑکوں اور دیگر سیاحتی سہولیات کی عدم موجودگی کے باعث اس ترقی اور روزگار کے بے پناہ مواقع سے یہاں کے عوام فائدہ نہیں اٹھا سکتے۔ انہوں نے کہا کہ علاقے میں سیاحتی روڈ، سیاحوں کی رہنمائی کے لیے سیاحت سہولیات مرکز، سیاحتی پولیس،آثارقدیمہ تک رسائی کے لیے سڑکیں دی جائیں اور واٹر بورڈ کی پانچ،چھ سو کنال اراضی صوبائی محکمہ سیاحت کے حوالے کی جائے تاکہ اسے سیاحت کی ترقی کے لئے استعمال کیا جاسکے۔انہوں نے ترنادہ تا کوہالہ بالا روڈ کی تعمیر جلد مکمل کرنے کے لیے درکار فنڈز جاری کرنے اور اپر خان پور کے لئے واٹر سپلائی پیکیج دینے کا مطالبہ بھی کیا۔ انہوں نے کہا کہ سرکاری نوکریوں سے بے روزگاری ختم نہیں ہوگی اس لئے سیاحت کی ترقی سے روزگار کے مواقع پیدا کیے جائیں جن کے علاقے میں وسیع امکانات موجود ہیں۔ جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے پی ٹی آئی کے رہنما یوسف ایوب خان نے کہا کہ بدقسمتی سے خان پور ہزارہ کا سب سے زیادہ پسماندہ علاقہ ہے جس کی وجہ سے یہاں کے لوگ باقی پاکستان سے چھ سو سال پیچھے ہیں۔ یوسف ایوب خان نے کہا کہ ہم بھائی خان پور کے حلقہ میں سیاست کرنے کی سوچ لے کر نہیں آئے بلکہ اس علاقے کو ترقی یافتہ علاقوں کے برابر لانے کے لئے آئے ہیں اور خان پور کے لوگوں کے ہم مشکور ہیں کہ انہوں نے ارشد ایوب کو منتخب کرکے ہمیں خدمت کا موقع دیا اوریوں 2018 کے الیکشن میں آزادی بھی حاصل کرلی۔ انہوں نے کہا کہ ہماری کوشش ہے کہ یہاں کے لوگ خوشحال بھی ہو ں۔یوسف ایوب نے کہا کہ ترنادہ سے کوہالہ بالا تک 35 کلومیٹر روڈ پر 55 گاؤں آباد ہیں لیکن اس پر کبھی توجہ نہیں دی گئی اور اب ہم یہ روڈ دو ارب 23کروڑ روپے کی لا گت سے تعمیر کر رہے ہیں۔انہوں نے بعض دیگر سڑکوں اور ترقیاتی منصوبوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ اپر خان پور میں پانی کا مسئلہ بھی بہت سنگین ہے جس کے حل کے لیے ہم وزیراعلیٰ سے واٹر سپلائی کا خصوصی پیکیج دینے کا مطالبہ کرتے ہیں۔

Facebook Comments