کراچی میں دو سال کے معصوم بچے کے ساتھ جنسی زیادتی

0 83

کراچی (یواین پی) کراچی میں دو سال کے معصوم بچے کے ساتھ جنسی زیادتی۔ لاچار ماں ایف آئی آر کٹوانے کے بعد تھانے کے چکر کاٹتی رہی، کسی نے بات نہ پوچھی۔ تفصیلات کے مطابق کراچی میں ایک اور انسانیت سوز واقعہ منظر عام پر آیا ہے جس میں ایک 2 سالہ ننھی کلی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنا دیا گیا ہے۔ سوشل میڈیا پر ایک این جی او کی جانب سے جاری کردہ ویڈیو میں خاتون کو اپنی مظلومیت کی دوہائی دیتے ہوئے دیکھا اور سنا جا سکتا ہے۔خاتون کا ویڈیو پیغام میں کہنا ہے کہ اس کے 2 سالہ معصوم بیٹے کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا، ان کا کہنا ہے کہ وہ بچے کے ساتھ ہوئی زیادتی کی ایف آئی آر کٹوا چکی ہیں لیکن تھانے کے بار بار چکر لگانے کے باوجود ان کی بات نہیں سنی جا رہی اور ملزمان کے خلاف کسی قسم کی کارروائی عمل میں نہیں لائی جا رہی ہے۔خاتون کا کہنا ہے کہ وہ اس بات پر خدا کا شکر ادا کرتی ہیں کہ ان کا بیٹا زندہ ہے اور ان کے پاس آ گیا ہے۔ بچے کی ماں نے چیف جسٹس آف پاکستان سے درخواست کی ہے کہ انہیں انصاف فراہم کیا جائے اور ملزمان کو سزائے موت دی جائے۔ خاتون کا کہنا ہے کہ ان کے بچے کے مرنے کا انتظار نہ کیا جائے اور اسے فوری انصاف دلوایا جائے، انہوں نے بتایا کہ ابھی ان کو دھمکی آمیز کالز آ رہی ہیں کہ کیس واپس لے لو۔ خاتون نے چیف جسٹس سے ہاتھ جوڑ کر درخواست کرتے ہوئے کہا کہ میری نہیں تو اس بچے کی معصومیت کی خاطر ہی سہی مگر انصاف ضرور دلوائیں۔

Facebook Comments