کارخانو مارکیٹ پولیس کی غیر مناسب روئے کے خلاف تاجران کا شٹر ڈاؤن ہڑتال

0 119

پشاور(جنرل رپورٹ) تفصیلات کے مطابق تاجروں نے جمرود اور کارخانو مارکیٹ کے سنگم پر واقعہ پولیس چیک پوسٹ اہلکاروں کے غیر مناسب روئے کے خلاف شٹر ڈاؤن ہڑتال کی گئی اور ستارہ مارکیث۔کابل پلازہ۔۔ملک تاج مارکیٹ۔عوامی مارکیٹ۔خیبر مارکیٹ۔نیشنل مارکیٹ۔شینواری پلازہ۔ رائل پلازہ اور شاہین پلازہ میں ہزاروں دکانوں کو احتجاجاً بند کیا گیا۔شٹر ڈاؤن ہڑتال کے موقع پر انجمن تاجران کے صدر فخر عالم افریدی۔بابر افریدی۔حاجی شاہ نواز افریدی۔حاجی ثمین افریدی۔ابراہیم خان افریدی۔میوہ خان۔طارق خان۔حاجی کوہی طور آفریدی نے میڈیا سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ کارخانو چیک پوسٹ پر پولیس اہلکار تاجروں کو بجا تنگ کرتے ہیں اور ڈیوٹی شدہ مال کی پکڑ دھکڑ کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ کارخانو مارکیٹ کے تاجر پراپرٹی ٹیکس۔ڈیوٹی ٹیکس اور دوسرے ٹیکس ادا کرتے ہیں تاہم اس کے باوجود پولیس تاجراوں کو بجا تنگ کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے تاجروں کو آسانیاں پیدا کرنے اور سہولیات دینے اور پولیس کو کرپشن سے پاک کرنے کا وعدہ کیا تھا تاہم اب انصاف دینے والی حکومت مکمل خاموش ہیں۔انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت ان اہلکاروں کے خلاف کاروائی کریں ورنہ دو دن بعد کارخانو ٹو پشاور روڈ کو ہر قسم ٹریفک کے لیے بند کردے گے۔انہوں نے کہا کہ معشیت کو ٹھیک کرنے کے لیے ضروری ہے کہ تاجروں کو کاروبار میں آسانیاں پیدا کی جائے تاکہ ہر فرد کو کاروبار اور سکون ملے۔انہوں نے کہا کہ کارخانو مارکیٹ تجارت کا ایک بڑا مرکز ہے تاہم پولیس کی غیر مناسب روئے اور سختیوں سے کاروبار تباہ ہونے کا خدشہ ہیں۔

Facebook Comments