وادی تیراہ کو سرکاری آٹے کی فراہمی میں ضلعی انتظامیہ رکاوٹ بن گئی ہے انکوائری کیا جائے

0 64

باڑہ(نمائندہ) وادی تیراہ تاجران یونین صدر محمد شریف افریدی کا میڈیا سے بات چیت۔ انہوں نے کہا کہ 9 جنوری پر ضلعی انتظامیہ سے بات ہوئی کہ روزانہ کے بنیاد پر سرکاری آٹے کی 500 تھیلے وادی تیراہ کو فراہم کر دینگے۔جس کے بعد صرف 13 جنوری کو ہزار تھیلوں کے ایک ٹرک آیا ہے جو کہ بعد میں کچھ بھی نہیں آیا ہے۔
انہوں نے کہا کہ وادی تیراہ کو سرکاری آٹے کی بندش کے حوالے سے رابطہ کیا تو انہوں نے کہا کہ جب تک اسسٹنٹ کمشنر ہم سے رابطہ نہ کریں تب تک ہم وادی تیراہ کیلئے پیکج کی فراہمی نہیں کر سکتے۔ انہوں نے کہا کہ وادی تیراہ کو سرکاری آٹے کی فراہمی میں ضلعی انتظامیہ رکاوٹ بن گئی ہے جن کا کہنا کہ سرکاری ریٹ سے زائد فروخت ہوتے ہیں لیکن وادی تیراہ کو آٹے کی ٹرک بیجنے پر 45 ہزار کرایہ آتا ہے جس کی وجہ سے وہاں پر 810 کی بجائے 840 پر فروخت کیا جاتا ہے جس کی وجہ سے وادی تیراہ کے عوام کو کوئی شکایت نہیں لیکن پھر بھی انتظامیہ ٹال مٹول سے کام لے رہے ہیں اور وادی تیراہ کو سرکاری آٹے کی فراہمی بند کیا گیا ہے انہوں اعلی حکام سے انکوائری کا مطالبہ کیا ہے۔

Facebook Comments