محکمہ داخلہ اور ڈپٹی کمشنر آفس لائسنس برانچ کے مابین اسلحہ لائسنس کارڈکا اجراءمعمہ بن گیا

چارمہینوں سے لائسنس کارڈکےلئے دفاترکے چکرکاٹنے پرمجبورہیں تاجربرادری اورعوام رل گئے۔

0 182

پشاور(جنرل رپورٹ) تفصیلات کے مطابق محکمہ داخلہ ارمزسیکشن اور ڈپٹی کمشنر لائسنس برانچ کے مابین آل پاکستان اور صوبے کےلئے لائسنسوں کااجراءمعمہ بن گیاہے عوام بالخصوص تاجربرادری کی کثیرتعدادکارڈکے حصول کےلئے خوارہونے لگیں متعلقہ حکام کی جانب سے پشاور میں آئے روز رونماہونے والے سٹریٹ کرائمز ،ٹارگٹ کلنگ،موبائل،سنیچنگ اور اغوابرائے تاوان کے پیش نظرلوگوں نے لائسنسوں کے حصول کےلئے ادائیگی کی ہوئی ہے اوراپنے لئے اسلحہ لائسنس کے کاغذات کلیئرنس کے بعدفیس کی ادائیگی کرکے کارڈکےلئے دردبدرکی ٹھویں کھانے پرمجبورہوگئے ہیں عوامی حلقوں کی جانب سے محکمہ داخلہ اور ڈپٹی کمشنرآفس لائسنس برانچ پرشدیدتنقید کی گئی ہے کہ فیس جمع کرانے کے باوجود متعلقہ حخام حیلے بہانوں اور وقت ضائع کرنے پرتلے ہوئے ہیں مشین خراب ہیں،کاغذنہیںوغیرہ وغیرہ کے بہانے کرتے ہیں جوکہ ایک المیہ ہے عوامی حلقوں اورتاجروں نے وزیراعلیٰ،سیکرٹری داخلہ ،کمشنرپشاور اورڈی سی پشاورسے نوٹس لینے اپیل کی ہے۔

Facebook Comments