لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں میڈیکولیگل کیسز کے بارے میں اہم فیصلے

0 145

پشاور (سٹی رپورٹر)لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں فورنزک میڈیسن کے بارے میں اہم اجلاس کاانعقاد کیا گیا، جس میں فورنزک میڈیسن کے سربراہ حکیم خان آفریدی نے اپنی ٹیم کے ہمراہ لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں میڈیکولیگل کیسز کے مسائل کے بارے میں تفصیلات سے آگاہ کیا۔ میٹنگ میں ایل آر ایچ کی انتطامیہ نے اس اہم مسئلے پر روشنی ڈالی کہ تمام صوبے سے جو میڈیکولیگل کیسز آتے ہیں،نہ صرف انکا علاج، انکی تمام کاغذی کاروائی اور ہسپتال کے ڈاکٹرز کو گواہی کیلئے دور دراز علاقوں میں کورٹ کچہری کے چکر لگانا پڑتے تھے۔ایل آر ایچ کے میڈیکل ڈائریکٹر ڈاکٹر سلیمان خان کا کہنا تھا کہ اس مسلئے کو حل کرنے کیلئے پورے صوبے میں یکجا اصول ہونے چاہیے اور ان کیسز کو حل کرنے کیلئے الگ ایکسپرٹ سٹاف کی ضرورت ہے جو کہ صوبے کے ہر ہسپتال میں موجود ہونے چاہیے۔ ایمرجنسی ڈائریکٹر حامد شہزاذ نے اس مسلئے کے حل کیلئے تجویز دیتے ہوئے کہا کہ ہر طرح کا علاج یہاں کیا تو جاسکتا ہے لیکن جس علاقے میں یہ کیس سامنے آیا ہے اس علاقے کا ہسپتال کاغذی کاروائی بھی کرے اور کورٹ کچہری میں گواہی بھی دے تاکہ ایل آر ایچ پر سے پورے صوبے کے کیسز کا بوجھ کم ہو اور یہاں کے ڈاکٹرز کورٹ کچہری کی بجائے ہسپتال میں اپنی خدمات سر انجام دیں۔ ہسپتال ڈائریکٹر ڈاکٹر خالد مسعود کا کہنا تھا کہ میڈیکو لیگل کیسز دراصل وہ کیسز ہیں جو لوگ جرائم کرنے یا جرائم سے متاثر ہو کر زخمی حالت میں ہسپتال آتے ہیں جن کا نہ صرف علاج کرنا پڑتا ہے بلکہ کاغذی کارروائی انتہائی احتیاط سے کرنی پڑتی ہے کیونکہ یہی کاغذی کارروائی کورٹ میں بطورِ ثبوت پیش ہوتی ہے۔ میڈیکل ڈائریکٹر ڈاکٹر سلیمان خان کا کہناتھا کہ اسطرح کی کاغذی کاروائی کیلئے ڈاکٹرز کو ایک خاص ٹریننگ دی جاتی ہے اور ہر ضلع میں یہ فرونزلک ٹرینر موجود ہوتا ہے جو کہ اسطرح کے کیسز کی کاغذی کارروائی کرتا ہے تاہم اگر کسی ضلع میں یہ ٹرینر موجود نہیں تو اس ضلع میں کسی ڈاکٹر کی یہ ذمہ داری لگائی جائے۔ علاوہ ازیں ہسپتال انتظامیہ کے ایم سی اور آئی سی آر سی کے تعاون سے ایل آر ایچ کے ڈاکٹرز کو فورنزک میڈیسن کی مزید ٹریننگ دی جائے گی۔

Facebook Comments