لانڈھی تھانے کا انٹیلی جنس پولیس اہلکار جرائم پیشہ عناصر کا سہولت کار بن گیا،

0 99

اسلام آباد(کرائم رپورٹر)لانڈھی تھانے کا انٹیلی جنس پولیس اہلکار جرائم پیشہ عناصر کا سہولت کار بن گیا، چھاپہ مار کارروائی سے قبل سنگین نوعیت کے ملوث ملزمان کو فرار ہو نے میں معاونت فراہم کرنے لگا، چند روز قبل لانڈھی پولیس نے دہشت گردوں کی جانب سے زمین بوس ہتھیار برآمد کئے تھے، کانسٹیبل عامر نے مالک مکان کا نام مقدمہ میں درج نہیں کرایا، تھانے کی سطح پر انٹیلی جنس ڈیوٹی انجام دینے والا سپاہی منشیات فروشوں سے ہفتہ وار بھتہ وصولی کرنے لگا، لانڈھی تھانے سے منسلک زرائع سے معلوم ہوا ہے کہ لانڈھی تھانے میں تعینات پولیس اہلکار عامر جوکہ پولیس ٹریننگ سینٹر میں سیٹنگ کرنے کے بعد لانڈھی تھانے میں انٹیلی جنس ڈیوٹی سرانجام دے رہا ہے، جبکہ مذکورہ پولیس اہلکار نے علاقہ میں جرائم پیشہ عناصر سے قریبی تعلقات بنا رکھے ہیں، منشیات فروش، گٹکا ماوا، سمیت سنگین نوعیت کے مقدمات میں مطلوب اہم دہشت گردوں سے رابطہ قائم کر رکھے ہیں، پولیس کی چھاپہ مار کارروائیوں سے قبل جرائم پیشہ عناصر کو آگاہ کر دیتا ہے، جس کا فائدہ اٹھاتے ہوئے اہم ملوث ملزمان موقع سے فرار ہونے میں کامیاب ہو جاتے ہیں، زرائع نے بتایا ہے کہ لانڈھی پولیس نے یکم جنوری کو لانڈھی کے علاقے ایریا 3 اے مکان نمبر 4 پر مخبر خاص کی اطلاع پر چھاپہ مار کارروائی کے دوران زمین بوس چھپا گیا بھاری تعداد میں اسلحہ اور گولیاں برآمد کی تھیں، مقدمہ درج کر تے ہوئے پولیس اہلکار عامر نے جس مکان سے اسلحہ برآمد ہوا تھا مالک مکان کا نام ایف آئی آر میں نامزد نہیں کرایا، زرائع نے بتایا ہے کہ ایف آئی آر میں نام شامل نہ کرنے کے عیوض لاکھوں روپوں کی ڈیل طے ہوئی تھی، زرائع کا کہنا ہے کہ کانسٹیبل عامر نے لانڈھی کے علاقے شریف کالونی 36 جی اور کرسچن کالونی لانڈھی نمبر ایک میں منشیات فروشوں سے رابطہ قائم کئے ہوئے ہیں، جہاں سے ہفتہ وار ہزاروں روپے بھتے کے عوض وصول کر تا ہے، مقامی پولیس منشیات کی لت میں مبتلا نشئی افراد کو حراست میں لینے کے بعد ان کی بتائی ہوئی ان جگہوں پر کارروائی کی جاتے ہیں تو سپاہی عامر مزکورہ علاقوں میں منشیات فروش کو پہلے ہی سگنل فراہم کر دیتا ہے، ملوث ملزمان پولیس چھاپہ سے قبل فرار ہو جاتا ہے، زرائع کا کہنا ہے کہ انٹیلی جنس اہلکار عامر کے زیر استعمال موبائل فون کی سی ڈی آر سمیت واٹس ایپ کالنگ ریکارڈ چیک کیا جائے تو کئ اہم انکشافات متوقع ہیں باخبر ذرائع کے مطابق منشیات فروش گوگا اس وقت ہسپتال میں ایڈمٹ ہے اس کا علاج چل رہا ھے کیونکہ گوگا منشیات فروخت کرنے کے ساتھ خود بھی منشیات کا عادی ھے ذرائع نے یہ بھی بتایا کہ پولیس اہلکار عامر چوبیس گھنٹے گوگا کے گھر پر ہی ہوتا ھے گوگا کی بیوی زویا جسم فروشی کا دھندہ کر رہی ھے اور منشیات کی فروخت میں بھی ملوث ھے ذرائع نے یہ بھی بتایا کہ گوگا کی بیوی کو پولیس اہلکار عامر فل سپورٹ کرنے کے ساتھ منشیات کی فروخت میں سہولت کاری فراہم کر رہا ھے۔

Facebook Comments