صوبائی کابینہ کا سپیشل پولیس فورس کی مستقلی کے حوالے سے یو ٹرن ،۔سپیشل پولیس فورس کے ساتھ دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے۔

سپیشل پولیس فورس نے باوردی سڑکوں پر نکلنے اوردھرنا دینے کا فیصلہ کر لیا۔ذرائع

0 141

پشاور(جنرل رپورٹ) صوبائی کابینہ نے سپیشل پولیس فورس کی مستقلی کے حوالے سے یو ٹرن لے لیا۔سپیشل پولیس فورس کے ساتھ دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے۔ سپیشل پولیس فور س کو مستقل کی بجائے ملازمت میں مزید 6ماہ کی توسیع دینے کا فیصلہ۔سپیشل پولیس فورس میں بے چینی اور غم و غصہ کی لہر دوڑ گئی۔سپیشل پولیس فورس نے باوردی سڑکوں پر نکلنے اوردھرنا دینے کا فیصلہ کر لیا۔پاکستان کی تاریخ میں پہلی بار پولیس فورس کسی حکومت کے خلاف احتجاج کرے گی۔ذرائع
تفصیلات خیبر پختونخواہ کے شورش و محدوش حالات کے پیش نظر 2009میں محکمہ پولیس نے کنٹریکٹ 15ہزار روپے ماہانہ تنخواہ پر سپیشل پولیس فورس کو بھرتی کیا گیاتھا۔ وزیر اعلیٰ خیبر پختواہ محمود خان نے سپیشل پولیس فورس کی مستقلی کے لئے جون 2019میں صوبائی اسمبلی سے باقاعدہ ایکٹ پاس کیا جبکہ صوبائی کابینہ سے بل بھی منظور کیااور ساتھ ہی محکمہ پولیس کو سکروٹنی کمیٹی قائم کرنے و سپیشل پولیس فورس کی سکروٹنی کرنے کے احکامات جاری کئے گئے۔ محکمہ پولیس نے تمام اہلکاروں کی سکروٹنی مکمل کرکے صوبائی کابینہ خیبر پختونخواہ بھیج دیئے جس پر صوبائی کابینہ نے یو ٹرن لے کر سپیشل پولیس فورس کر مستقل کرنے کی بجائے ان کی ملازمت میں 6ماہ توسیع دینے کا باقاعدہ اعلان کر دیا ہے۔ جس کے نتیجے میں سپیشل پولیس فورس میں سخت بے چینی اور غم و غصہ کی لہر دوڑ گئی اور موجودہ حکومت کے خلاف باوردی سڑکوں پر نکلنے اور دھرنا دینے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ سپیشل پولیس فورس کے اہلکاروں نے کہا کہ حکومت ہمارے مستقبل اور ہمارے بچوں کے ساتھ کھلواڑ کر رہی ہے۔ حکومت نے جو وعدے ہمارے ساتھ کئے تھے وہ وعدے دھرے کے دھرے رہ گئے اور کہا کہ یہ احتجاج پاکستان کی تاریخ کا انوکھا احتجاج ہو گا جس میں پولیس اہلکار باوردی سڑکوں پر نکلے گے۔

Facebook Comments