زمین کے تنازعہ پرایک ہی گھر کے 4 افراد کے قتل مقدمہ درج

0 164

اٹک(صباح نیوز): درختوں اور اراضی کے تنازعہپر ایک ہی گھر کے 4 افراد قتل کردیے گئے 5 افراد کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا ۔ ایک ہی گھر کے 4 مقتولین کے جنازے اٹھائے گئے تو علاقہ میں کہرام مچ گیا۔
اسد نسیم ولد نسیم گل ساکن گڑدی تحصیل جنڈ کی تھانہ انجراء میں درج ایف آئی کے مطابق وہ اپنے ماموں ظاہر شاہ ولد مسکین خان کے ہمراہ موجود تھا کہ اس اثنا ء میں میرا بھائی محمد ایوب ، چچا عبدالعزیز ولد سپین گل زمینوں کی دیکھ بھال کر کے موٹر سائیکل پر آ ر ہے تھے ہمیں دیکھ کر رک گئے اسی اثناء میں عطاء اللہ خان مسلح کلاشنکوف ، حبیب اللہ مسلح کلاشنکوف ، ثناء اللہ مسلح بندوق 12 بور ، حمید اللہ مسلح بندوق 12 بور پسران عطاء اللہ خان اقوام پٹھان سکنائے گڑدی آ گئے۔
آتے ہی فائرنگ کردی گئی فائرنگ سن کر میرے والد نسیم گل ، والدہ شمع پروین اور صوبیدار اعظم خان بھی آ گئے فائرنگ کر کے میرے والد اور والدہ کو موت کے گھاٹ اتار دیا ملزمان اسلحہ لہراتے ہوئے فرار ہو گئے جبکہ بھائی چچا بھی ضربات کی تاب نہ لاتے ہوئے موقع پر ہی جاں بحق ہو گئے ۔وجہ عناد زمین کا تنازعہ ہے۔ پولیس نے زیر دفعہ 302,109-34 ت پ کے تحت مقدمہ درج کر لیا ہے۔
ایک ہی گھر کے خاتون سمیت 4 افراد کے جنازے گھر سے اٹھائے گئے تو علاقہ میں کہرام مچ گیا۔ مقامی عیدگاہ میں پولیس کی بھاری نفری تعینات تھی۔ جنازہ میں ڈی پی او سید خالد ہمدانی ، رکن پنجاب اسمبلی ملک جمشید الطاف ، سابق چیئرمین یونین کونسل دکھنیر خان وزیر خٹک سمیت مقتولین کے عزیز و اقارب ، معززین علاقہ اور گائوں کے افراد نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔ مقتولین کو آبائی قبرستان میں سپرد خاک کر دیا گیا اس موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے ڈی پی او نے کہا کہ ملزمان کی گرفتاری کیلئے ڈی ایس پی جنڈ کی نگرانی میں پولیس چھاپہ مار ٹیمیں تشکیل دی ہیں جو مختلف مقامات پر چھاپے مار رہی ہیں ۔
فرانزک لیبارٹری اور جدید ترین ذرائع استعمال کر کے ملزمان کو گرفتار اور ان کو عدالت سے قرار واقعی سزا دلانے کی کوشش کی جائے گی۔انھوں نے کہا کہ مقتول پارٹی کی داد رسی کیلئے پولیس اپنے تمام وسائل بروئے کار لائے کر جلد ہی ملزمان کو گرفتار کر کے کیفر کردار تک پہنچائے گی۔ یاد رہے کہ درختوں اور اراضی کے تنازعہ پر تھانہ انجراء کے گائوں گڑدی میں میں یہ واقعہ رونما ہوا۔ دونوں پارٹیاں آپس میں قریبی رشتہ دار ہیں۔ درختوں اور اراضی کے تنازعہ پر مسلح تصادم ہوا ۔

Facebook Comments