خیبر پختونخوا میں خواتین کھلاڑیوں کےلئے انڈر 16ٹیلنٹ ہنٹ پروگرام کا آغاز

0 56

پشاور۔:خیبر پختونخوا میں انڈر16ٹیلنٹ ہنٹ پروگرام کے تحت صوبے بھر میں خواتین کھلاڑیوں کے ٹرائلزکا آغا زہوگیا، حال ہی میں تعینات خواتین کوچز اضلاع کی سطح پربیڈمنٹن، ٹیبل ٹینس، اتھلیٹکس اور والی بال کی باصلاحیت کھلاڑیوں کاانتخاب کرکے ایک فہرست مرتب کریں گی۔خیبر پختونخوا میں نچلی سطح پر ٹیلنٹ تلاش کر کے سامنے لانے کیلئے ٹیلنٹ ہنٹ پروگرام کے تحت صوبے کے تمام ڈویژن میں مرد وخواتین کھلاڑیوں کے ٹرائلزکا آغا زہوگیا ہے اس پروگرام کے کے تحت صوبے بھر میں خواتین کھیلوں کو بھی صحیح معنوں میں فروغ ملے گا، ڈی آئی خان، ٹانگ، لکی مروت اور کوہاٹ میں باقاعدہ ٹرائلز کا انعقاد کیا گیا ہے، دوسرے مرحلے میں پشاور، نوشہرہ، چارسدہ، سوات، دیر، ایبٹ آباد اور دیگر ااضلاع سمیت قبائلی علاقوں میں بھی صاف وشفا ف ٹرائلز کے ذریعے بیڈمنٹن، ٹیبل ٹینس، اتھلیٹکس اور والی بال کی باصلاحیت کھلاڑیوں کا انتخاب عمل میں لاکر ایک فہرست تیار کی جائے گی۔ صوبائی سپورٹس ڈائریکٹریٹ کے زیر اہتمام انڈر 16 ٹیلنٹ ہنٹ کے حوالے سے خواتین کھلاڑیوں کے ٹرائلز مختلف اضلا ع میں لئے جارہے ہیں جسکے لئے سپورٹس بورڈ کی خواتین کوچز بشری، آمنہ، سائرہ اور مدیحہ کی ایک ٹیم ہے،ان خواتین کوچز نے لکی مروت، ٹانک اور ڈی آئی خان میں بیڈمنٹن، ٹیبل ٹینس، اتھلیٹکس اور والی بال کے ٹرائلز لئے گئے، ان ٹرائلزمیں مختلف مقامی سکولوں کی طالبات نے بڑھ چڑھ کر حصہ لیا، اس موقع پر اضلاع کی سطح پر گرلز انٹر سکولز کھیلوں کے مقابلوں میں پوزیشن لینے والی طالبات کو بھی موقع دیا اور انکے مابین باقاعدہ مقابلے منعقد کرائے، ان مقابلوں میں بہتر کھیل کا مظاہرہ کرنے والی بچیوں کو منتخب کرتے ہوئے اس کی ایک لسٹ مرتب کرلی، جسے ڈائریکٹریس سپورٹس رشید ہ غزنوی کے حوالے کردی ہے۔اس حوالے سے ڈائریکٹریس سپورٹس برائے خواتین رشیدہ غزنوی سے رابطہ کیا تو ان کا کہنا تھا کہ اللہ کا فضل ہے خیبر پختونخوامیں خواتین کھیلوں کے حوالے سے کافی ٹیلنٹ موجود ہے اس ٹیلنٹ کو مزید پالش کرکے سامنے لانے کیلئے سپورٹس ڈائریکٹریٹ میں خواتین کوچز کی تعیناتی عمل میں لائی گئی ہے ان کوچزکی ذمہ داری یہ ہے کہ وہ صوبے کے مختلف اضلاع میں جاکر خواتین کھلاڑیوں کے ٹرائلز منعقد کرائے اور انہیں مزید ٹریننگ دیں، اور انشا اللہ وہ اپنا کام ایمانداری سے کر رہی ہیں، انہوں نے بتایا کہ اس سے قبل بھی صوبے میں خواتین کھیلوں کے حوالے سے کافی کام ہوا اور اب باقاعدہ ایک ٹیم کیساتھ مزید بہتر کام ہوگا جس سے یقینا خیبر پختونخوامیں خواتین کھیلوں کو فروغ ملے گا اور صوبے کے کونے کونے سے چھپے ہوئے ٹیلنٹ کو نکھار کر سامنے لایا جائیگا۔ انہوں نے مزید کہا کہ ڈی آئی خان، لکی مروت اور ٹانک کی طرح پشاور، چارسدہ، نوشہرہ، ایبٹ آباد، مانسہرہ، سوات، دیر، چترال اور کوہاٹ سمیت تمام اضلاع میں شیڈول کے تحت خواتین کھلاڑیوں کے ٹرائلز لئے جائینگے۔

Facebook Comments