بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام (بی آئی ایس پی) سے فائدہ اٹھانے والے چار سرکاری افسر برطرف

0 104

اسلام آباد(بیورو رپورٹ)بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام (بی آئی ایس پی) سے فائدہ اٹھانے والے چار سرکاری افسر برطرف کردیئے گئے۔ تفصیلات کے مطابق بتایا گیا ہے کہ بے نظیر انکم سپورٹ سے فائدہ اٹھانے والے 17 گریڈ کے چار افسروں کو برطرف کر دیا گیا ہے۔ نجی چینل کی رپورٹ کے مطابق چاروں افسر وں بیویاں کے نام پر وظیفہ لیتے رہے جس کے باعث انکو برطرف کر دیا گیا ہے۔ حکومت کی جانب سے برطرفی کا نوٹس جاری کر دیا گیا ۔برطرف ہونیو الے افسروں میں ، نعمان ذہیم ، شفیع اللہ ، سید فضل امین اور سبیل خان شامل ہیں۔ جن کا تعلق ایبٹ آباد اور ڈیرہ اسماعیل خان سے ہے۔ واضح رہے وزیراعظم کی جانب سے بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام سے فائدہ اٹھانے والے افسروں کے نام منظر عام پر لانے کا حکم دیا گیا تھا ۔ بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام سے فائدہ اٹھانے والے سرکاری افسروں کی رپورٹ وزیراعظم عمران خان کو پیش کی گئی تھی۔

جس کے بعد عمران خان نے بے ظابطگیوں میں افسروں کے ملوث ہونے پر اظہار برہمی کیا۔ وزیراعظم نے ہدایت جاری کرتے ہوئے کہا کہ لوٹ مار کرنے والوں کے نام قوم کے سامنے لائے جائیں ۔عمران خان نے اظہار برہمی کرتے ہوئے کہا کہ غریبوں کا پیسہ لوٹنے والوں کو چھوٹ نہیں دے سکتے۔ واضح رہے ۔ اس سے قبل اینکر پرسن اسامہ غازی نے تفصیل سے آگاہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ وزیراعظم کی معاون خصوصی ثانیہ نشتر نے بتایا کہ وہ خود برقعہ پہن کر بے نظیر انکم سپورٹ مراکز پر گئی تھیں ، جہاں معاون خصوصی نے دیکھا عورتین گاڑی سے اتر کر بے نظیر انکم سپورٹ کے پیسے وصول کر رہی تھی ساتھ ہی کئی خواتین نے سونے کی چوڑیاں بھی پہن رکھی تھیں۔ اسامہ غازی نے کہا کہ یہ وہ وجہ تھی جس کےباعث 8 لاکھ سے زائد افراد کو اس سکیم سے نکال دیا گیا۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

 

Facebook Comments