بھارت کے یوم جمہوریہ کو لائن آف کنٹرول کے دونوں اطراف کشمیری عوام نے یوم سیاہ کے طورپرمنایا

0 114

مظفرآباد(صباح نیوز): بھارت کے یوم جمہوریہ کو لائن آف کنٹرول کے دونوں اطراف کشمیری عوام نے یوم سیاہ کے طور پر منایا، مظفرآباد میں پاک کشمیر سوسائٹی کے زیر اہتمام ریلی نکالی گئی ،
سیاہ غبارے فضا میں چھوڑے گئے،مسلم لیگ ن آزاد کشمیر کے مرکزی جوائنٹ سیکرٹری چوہدری احسن منظور نے یوم سیاہ ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بھارت جیسے غاصب اور جارح ملک کو یوم جمہوریہ منانا زیب نہیں دیتا عالمی برادری دہرا معیار ترک کرے، اقوام متحدہ وعدے پر عملدرآمد کرائے تاکہ خطہ میں امن قائم ہو سکے ۔
تفصیلات کے مطابق بھارت کے یوم جمہوریہ کو لائن آف کنٹرول کے دونوں اطراف کشمیری عوام نے یوم سیاہ کے طور پر منایا، آزاد کشمیر بھر میں بھارت مخالف ریلیاں نکالی گئی اور بھارت سے نفرت کا اظہار کیا گیا، مظفرآباد میں پاک کشمیر آرٹس سوسائٹی کے زیر اہتمام بھارت مخالف احتجاجی ریلی نکالی گئی ریلی میں مسلم لیگ ن آزاد کشمیر کے مرکزی جوائنٹ سیکرٹری چوہدری احسن منظور نے قیادت کی، ریلی میں اعجاز زرگر، شہزاد لولابی، وحید شاہ، ناصر یعقوب، بلال بشیر، عبداللہ چوہدری، شیخ باسط، راجہ عمران، راجہ گل زرین سمیت مسلم لیگ ن کے کارکنان اورمختلف سیاسی و سماجی شخصیات نے شرکت کی،
ریلی کے شرکا نے پاکستان زندہ باد، کشمیر بنے گا پاکستان اور بھارت مردہ باد کے نعرے لگائے، شرکائے ریلی سے خطاب کرتے ہوئے مسلم لیگ ن کے مرکزی جوائنٹ سیکرٹری چوہدری احسن منظور نے کہا کہ بھارت جیسے جارح اور غاصب ملک کو یوم جمہوریہ منانا زیب نہیں دیتا جس نے سات دہائیوں سے زائد عرصہ سے کشمیر پر غاصبانہ قبضہ کر رکھا ہے، پانچ اگست 2019 سے کشمیر کی خصوصی حیثیت کو بھی ختم کر دیا گیا ہے کشمیری بھارت کے کسی جبری اقدامات کی حمایت نہیں کرتے اور مقبوضہ کشمیر سے بھارتی فورسز کے انخلاء کے لئے ہر قیمت چکانے کیلئے تیار ہیں،
انہوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر لہو لہو ہے اور اس وقت تک عالمی برادری خاموش تماشائی کا کردار ادا کررہی ہے جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ کشمیر کے مسئلے پر دہرا معیار ترک کر کے کشمیری عوام کو استصواب رائے کا حق دلوانے کیلئے آگے بڑھے کشمیری سہ فریقی مذاکرات کے ذریعے مسئلہ کشمیر کا پر امن حل چاہتے ہیں جس کیلیے عالمی برادری کو اپنا ٹھوس کردار ادا کرنا ہوگا انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کے اصل فریق کشمیری ہیں اور بھارت جیسے غاصب اور جارح ملک سے آزادی کیلیئے قربانیاں دیتے آئے ہیں بھارت کے اوچھے ہتھکنڈوں سے کشمیری عوام خوفزدہ نہیں ہیں بھارت کو ایک دن ضرور کشمیر سے اپنی فورسز کا انخلا کرنا ہی ہوگا ریلی کے اختتام پر شہدائے کشمیر اور آزادی کشمیر کے لئے خصوصی دعا بھی کی گئی۔

Facebook Comments