بلاول بھٹو کی حکومت کی جانب سےہائرایجوکیشن کی بجٹ میں بڑے پیمانے پر کٹوتی کی مذمت

0 144

اسلام آباد(بیورو رپورٹ): چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے پی ٹی آئی کی حکومت کی جانب سے ہائر ایجوکیشن کی بجٹ میں بڑے پیمانے پر کٹوتی کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک کی 104سرکاری یونیورسٹیاںاپنی تاریخ کے بدترین مالی بحران سے گزر رہی ہیں ،
پشاور یونیورسٹی سمیت ملک کی اہم یونیورسٹیاں اپنے عملے کو تنخواہیں اور پنشن کی ادائیگی کرنے کے قابل نہیں ہیں۔ چیئرمین پیپلزپارٹی نے کہا کہ کٹ پتلی حکومت مطلوبہ 158ارب روپے کے بجٹ میں سے اس کا نصف حصہ بھی مختص کرنے کے لئے تیار نہیں ہے۔ حکومت پبلک سیکٹر کی یونیورسٹیوں کو اپنے معاملات چلانے کے لئے قرضہ لینے پر مجبور کر رہی ہے۔
اپنے بیان میں بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ وفاقی حکومت نے تحقیق اور اعلی تعلیم کو بھی بری طرح نظرانداز کر دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کٹھ پتلی حکومت نے اپنے سلیکٹرز کی ناک کے نیچے ملکی معیشت کو تباہ کر دیا ہے۔ لاکھوں افراد کو غربت کی لکیر سے نیچے دھکیل دیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ملک کو سماجی ، معاشی اور سیاسی دلدل میں پھنسا دیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سرکاری شعبوں کی یونیورسٹیوں کو بلا تاخیر درکا ر تمام فنڈز جاری کئے جائیں ۔ انہوں نے کہا کہ پیپلزپارٹی اس سنگین بحران کے دوران پبلک سیکٹر یونیورسٹیوں کے طلبا، اساتذہ اور ملازمین کے ساتھ ہیں۔

Facebook Comments